ایک اچھا ڈیبیٹر کیسے بنا جا سکتا ہے ؟

ایک اچھا ڈیبیٹر کیسے بنا جا سکتا ہے ؟
ایک اچھا ڈیبیٹر اس طرح بنا جا سکتا ہے کہ آپ کا مطالعہ اور آپ کی برداشت اس لیول پر ہوں کہ آپ جو بات کریں آپ وہ بات سمجھتے ہوں, آپ کے نزدیک بیشک وہ بات سو فیصد سچ ہو لیکن آپ دوسروں کو اختلاف کاحق ضرور دیں. ایک اچھا ڈیبیٹر اپنا اسٹیج فوبیا ختم کرتا ہے , بات سننے کی صلاحیت اپنے اندر پیدا کرتا ہے. اپنے اندر اخلاقی جرت پیدا کرتا ہے کہ وہ بات کا منطقی جواب دے . اختلاف کرے مخالفت نہ کرے . اور سب سے بڑھ کر کہ وہ موء دب ہو اور اس کو یہ پتا ہو کہ وہ سب کچھ نہیں جانتا . اب دیکھیں خدا کے علاوہ سب کچھ کوئی نہیں جانتا. لوگوں نے سرکار سے عرض کیا کہ قیامت کب آئے گی , آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جتنا پوچھنے والے کو پتا ہے اتنا ہی مجھے پتا ہے,  تو ہر چیز کا علم تو صرف خدا کو ہی ہے. اللہ کی ذات سب کچھ جانتی ہے لیکن انسان کو اتنا ہی علم دیا جتنا اس کے لیے بہتر ہے. فرما یا گیا کہ اس علم سے بھی بچیں جس پر آپ عمل نہ کر سکیں. اب اگر ہم نے وہ علم حاصل کر لیا جس پر عمل نہیں کرنا تو کیا فائدہ اس علم کا . جتنا زیادہ سیکھیں گے اتنے ہی اچھے ڈیبیٹر بنتے جائیں گے .