سندھ کے طلباء کو اینگرو انرجی کی جانب سے اسکالرشپس دینے کا اعلان!

سندھ کے طلباء کو اینگرو انرجی کی جانب سے اسکالرشپس دینے کا اعلان!
اینگرو انرجی لمیٹڈ(EEL) نے دوردراز کے علاقوں سے تعلق رکھنے والے مستحق طلباء کے ٹیلنٹ کو فروغ دینے کیلئے چائنا مشینری انجینئرنگ کارپوریشن (CMEC) کے اشتر اک سے چین کی صفِ اوّل کی پانچ یونیورسٹیوں کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کئے ہیں جس کے تحت ان طلباء کو انجینئرنگ اور نان انجینئرنگ کے مضامین میں اسکالرشپس فراہم کی جائیں گی
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2019ء) اینگرو انرجی لمیٹڈ(EEL) نے دوردراز کے علاقوں سے تعلق رکھنے والے مستحق طلباء کے ٹیلنٹ کو فروغ دینے کیلئے چائنا مشینری انجینئرنگ کارپوریشن (CMEC) کے اشتر اک سے چین کی صفِ اوّل کی پانچ یونیورسٹیوں کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کئے ہیں جس کے تحت ان طلباء کو انجینئرنگ اور نان انجینئرنگ کے مضامین میں اسکالرشپس فراہم کی جائیں گی۔
کمپنی سے جاری اعلامیئے کے مطابق اینگرواپنے کام کرنے والے علاقوں سے تعلق رکھنے والے افراد کو مکمل مالی اسکالرشپس فراہم کرے گی۔اس کے علاوہ تعلیمی اسکالرشپس فراہم کرنے کیلئے ، شراکت داری کے تحت شارٹ لسٹ کئے گئے طلباء کو یونیورسٹی کی فیکلٹی اور اینگروکے ملازمین کے مابین صلاحیتوں کو فروغ دینے کے مواقعوں کے ساتھ ساتھ دوران ملازمت اور باہمی تعاون کے مواقعوں پر تربیت بھی فراہم کی جائے گی۔
اس مقصد کیلئے اینگرو انرجی لمیٹڈ اور چائنا مشینر ی انجینئرنگ کارپوریشن نے لیونگ ٹیکنیکل یونیورسٹی اورنارتھ چائنا الیکٹرک پاور یونیورسٹی کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کئے ہیں جبکہ یونیورسٹی آف الیکٹرانک سائنس اینڈ ٹیکنالوجی چائنا، جیانگ سو یونیورسٹی اوربیجنگ نارمل یونیورسٹی کے ساتھ معاہدے پر جولائی 2019میں دستخط کئے جائیں گے۔
یونیورسٹی اسکالرشپس کے علاوہ اینگرو انرجی لمیٹڈ اور چائنا مشینری انجینئرنگ کارپوریشن تین سال کے ماسٹرز پروگرام کیلئے مشترکہ طورایک اسٹوڈنٹ کا انتخاب کریں گے جس کو 2019میں شروع ہونے تعلیمی سال کیلئے ٹیوشن فیس، رہائش کا خرچہ اور ایک ریٹرن ٹکٹ پر مشتمل مکمل اسکالرشپ فراہم کی جائے گی۔اینگرو انرجی لمیٹڈ اور چائنا مشینری انجینئرنگ کارپوریشن 2022تک ہر سال اس اسکالرشپ کی فراہمی کو بھی یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ طلباء کو جانچنے اور انٹرویوزلینے کے بعد ان یونیورسٹیز کو اسکالر شپس کیلئے ایسے بہترین طلباء کی فراہمی کو بھی یقینی بنائیں گی جو تمام تعلیمی ضروریات کو پورا کرنے کے اہل ہوں۔
اس موقع پر اینگرو انرجی لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر احسن ظفر سیّد نے کہا کہ تھر پارکر پاکستان کے 114اضلاع میں انسانی ترقی کے انڈیکس پر109نمبر پر ہے جبکہ تعلیم اورصنفی مساوات کے شعبوں کا بھی یہی حال ہے جہاں تھر پارکرکا نمبر سب سے آخر میں آتا ہے لیکن اس کی و جہ یہ نہیں ہے کہ تھر کے نوجوانوں میں ٹیلنٹ کی کمی ہے بلکہ اس کی بنیادی وجہ ان کے پاس اعلیٰ تعلیم تک رسائی کے مواقع نہیں ہیں اور اس کمی کو پورا کرنے کیلئے ہم اینگرو انرجی میں تھر کے بچوں کو چائنا کی اعلیٰ ترین یونیورسٹیوں میں اسکالر شپس فراہم کرنے کی کوششیں کررہے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ اس پروگرام کے تحت ہم اپنی آنے والی نسلوں کو بین الاقوامی ڈگریوں اوررصلاحیتوں سے لیس کرکے ایک مضبوط اور روشن پاکستان کی بنیاد رکھ رہے ہیں۔
اس موقع پر اینگرو انرجی کے ڈائریکٹر ہیومن ریسورس کاشف سومرو نے کہا کہ ایسے علاقوں میں جہا ں اینگرو انرجی لمیٹڈ کام کررہی ہے ہمارا عزم ہے کہ ہم ان علاقوں میں ایک ایسا جامع ماڈل قائم کریں جہاں ہماری توجہ ان مقامی لوگوں کی انسانی ترقی پر مرکوز ہو۔
اس سے قبل مارچ 2018میں اینگرو انرجی لمیٹڈ اور چائنا مشینر ی انجینئرنگ کارپوریشن نے تھر کے طلباء کے چین کے مستند یونیورسٹیوں میں اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے خواب کو پورا کرنے کیلئے ایک معاہدے پر دستخط کئے تھے۔اس پروگرام کی شروعات سے اب تک اس پروگرام کے تحت سخت اسکریننگ، ٹیسٹنگ اور عمل کے بعدتھر کے رہائشی 4طلباء کوان یونیوریسٹیز میں انجینئرنگ کے مضامین میں اسکالرشپس فراہم کی جاچکی ہیں۔