پشاور ہائی کورٹ:پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کی دائر پٹیشن پر صوبہ بھر کے تعلیمی بورڈ کو نوٹسز جاری کردیئے

پشاور ہائی کورٹ:پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کی دائر پٹیشن پر صوبہ بھر کے تعلیمی بورڈ کو نوٹسز جاری کردیئے
ایبٹ آباد (کرئیر کاروان) پشاور ہائی کورٹ ایبٹ آباد بینچ نے پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک (پن) خیبر پختونخوا کی جانب سے دائر پٹیشن پر صوبہ بھر کے تعلیمی بورڈ کو نوٹسز جاری کر دیئے، سیکرٹری ایبٹ آباد بورڈ کو ذاتی طور پر 30 مئی کو پیش ہونے کا حکم دیا گیا ہے۔ پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کی جانب سے معروف قانون دان سردار ناصر اسلم خان کیس کی پیروی کر رہے ہیں۔ پن کے صوبائی صدر محمد سلیم خان نے اس موقع پر بتایا کہ پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک (پن) خیبر پختونخوا نے تعلیمی بورڈز کی جانب سے جماعت پنجم و ہشتم کے اسسمنٹ اور ہشتم کے بورڈ اور نہم اور دہم کمپوزٹ امتحانات کو ایک رٹ پٹیشن کے ذریعہ چیلنج کر رکھا تھا جس کی سماعت کے دوران عدالت نے صوبہ کے تمام متعلقہ بورڈز کو نوٹسز جاری کر دیئے جبکہ سیکرٹری ایبٹ آباد تعلیمی بورڈ کو آئندہ سماعت 30 مئی کو ذاتی طور پر پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔ پن نے اپنی رٹ پٹیشن میں موقف اختیار کرتے ہوئے بورڈز کی جانب سے جماعت پنجم اور ہشتم کے اسسمنٹ اور ہشتم کے بورڈ اور نہم اور دہم کمپوزٹ امتحانات کے جاری کردہ نوٹیفکیشنز کو توہین عدالت قرار دیا ہے۔