داخلے میرٹ کے برخلاف

گورنمنٹ ڈگری کالج کراچی میں داخلے میرٹ کے برخلاف

کراچی (نمائندہ کریئر کاروان) کراچی کے ٹاپ کے کالجوں میں سندھ بھر کے طلبہ کو مرکزی داخلہ پالیسی کے تحت تمام داخلے دیئے جاتے ہیں اور کوئی کوٹہ مختص نہیں تاہم گورنمنٹ ڈگری کالج سٹیڈیم روڈ میں گزشتہ کئی برسوں سے میرٹ کی خلاف ورزی کی جارہی ہے اور سیکڑوں داخلے میرٹ کے خلاف دے دیئے گئے ہیں ۔جس پر اب گورنمنٹ ڈگری کالج سٹیڈیم روڈ میں مرکزی داخلہ پالیسی کے برعکس سیکڑوں داخلے میرٹ کے برخلاف دینے کا معاملہ سنگین نوعیت اختیار کرگیا ہے، سکریٹری کالج ایجوکیشن پرویز سیہڑ نے کالجز کے پرنسپل ڈاکٹر طارق کو 10 سالہ ایڈمیشن ریکا رڈکے ہمراہ طلب کرلیا ہے، سکریٹری کالج ایجوکیشن پرویز سیہڑ نے بتایا کہ کیپ کے تحت تمام سرکاری کالجوں میں داخلے میرٹ پر دیئے جاتے ہیں اور کسی کالج کا کوئی کوٹہ نہیں حتیٰ کہ وزیر اعلیٰ کا بھی کوئی کوٹہ نہیں ہے اور یہ بات باعث تشویش ہے کہ اے ون گریڈ کے طلبہ کے ساتھ ، اے، بی اور سی گریڈ کے طلبہ کوٹے کے نام پر پڑھ رہے ہیں چنانچہ میں نے پرنسپل کو کہا ہے کہ 10 سال کے داخلوں کا ریکارڈ لے کر آجائے ضررت پڑی تو ہم بورڈ سے بھی ریکارڈ مانگ لیں گے واضح رہے کہ مرکزی داخلہ پالیسی کی منظوری ہر سال دی جاتی ہے
اور کراچی کے ٹاپ کے کالجوں میں سندھ بھر کے طلبہ کو مرکزی داخلہ پالیسی کے تحت تمام داخلے دیئے جاتے ہیں اور کوئی کوٹہ مختص نہیں تاہم گورنمنٹ ڈگری کالج سٹیڈیم روڈ میں گزشتہ کئی برسوں سے میرٹ کی خلاف ورزی کی جارہی ہے اور سیکڑوں داخلے میرٹ کے خلاف دے دیئے گئے ہیں‘جس کا وزیر تعلیم سندھ سردار علی شاہ نے نے بھی نوٹس لیا تھا اور کہا تھا حکومت مکمل میرٹ پر یقین رکھتی ہے انھوں نے کہا کہ مرکزی داخلہ پالیسی کے تحت کوئی کوٹہ نہیں ہے تمام داخلے میرٹ پر ہوتے ہیں لہٰذاسٹیڈیم روڈ کالج سمیت کسی بھی کالج میں کوٹے کی بنیاد پر داخلے ممکن نہیں کیونکہ میرٹ کا اطلاق سب پر یکساں ہوتا ہے۔