جامعہ سندھ جامشورو: 15 جولائی سے شروع ہونے والے سیمسٹر کا آغاز شجرکاری مہم سے کیا جا ئے گا

حیدرآباد ۔ (کرئیرکاروان) جامعہ سندھ جامشورو کی جانب سے 15 جولائی سے تمام تعلیمی شعبوں میں شروع ہونے والے دوسرے سیمسٹر کا آغاز یونیورسٹی کی تاریخ کی بڑی شجرکاری مہم سے کیا جائے گا۔  اس سلسلے میں گذشتہ دن 200 درخت لگائے گئے، جبکہ دو ہفتوں کے دوران مزید 45 ہزار پودے و درخت لگاکر پوری یونیورسٹی کو سرسبز بنانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے شیخ الجامعہ سندھ پروفیسر ڈاکٹر فتح محمد برفت اور ایڈیشنل آئی جی پولیس حیدرآباد ڈاکٹر غلام سرور جمالی نے پودے لگاکر جامعہ سندھ میں شروع ہونے والی شجرکاری مہم کا افتتاح کیا جامعہ سندھ جامشورو کی جانب سے جامعہ کی تاریخ کی بڑی شجرکاری مہم کا افتتاح شیخ الجامعہ سندھ ڈاکٹر فتح محمد برفت اور ایڈیشنل آئی جی پولیس حیدرآباد ڈاکٹر غلام سرور جمالی نے بینظیر بھٹو چیئر اینڈ کنوینشن سینٹر میں پودے لگاکر کیا اس موقع پر مختلف تعلیمی و انتظامی شعبوں کے سربراہ، مختلف کیمپسز کے پرو وائس چانسلر، فیکلٹیز کے ڈین، پولیس افسران و دیگر موجود تھے۔ جامعہ سندھ میں شجرکاری مہم کی افتتاحی تقریب کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ الجامعہ سندھ پروفیسر ڈاکٹر فتح محمد برفت نے کہا کہ یونیورسٹی کی تاریخ کی بڑی شجرکاری مہم شروع کی گئی ہے تاکہ جامعہ سندھ کو سرسبز بنانے کے بعد اس مہم کو پوری سندھ و ملک کے کونے کونے تک لے جایا جا سکے انہوں نے کہا کہ درخت ہی آکسیجن کی فراہمی کا واحد ذریعہ ہیں اس موقع پر ڈاکٹر غلام سرور جمالی نے شجرکاری مہم میں شرکت کی دعوت دینے پر شیخ الجامعہ سندھ ڈاکٹر برفت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ درخت زندگی ہیں، جن میں سے آکسیجن ملتی ہے، اس لیے ہر آدمی کی ذمہ داری ہے کہ مستقبل میں انسانوں کی تکالیف کو دور کرنے کیلئے اپنے اپنے حصے کے درخت لگائے اور ان کی حفاظت کرکے ان کو بڑا کیا جائے ۔انہوں نے اعلان کیا کہ جامعہ سندھ کی طرح پولیس اسٹبلشمنٹ میں بھی بھرپور شجرکاری مہم چلائی جائے گی اور بڑے پیمانے پر درخت لگائے جائیں گے۔