سیکریٹری سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن کو ہٹانے کا فیصلہ

کراچی (نمائندہ کریئر کاروان) صوبائی حکومت نے سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن کو فعال نہ کرنے اور یونیورسٹیز اور تعلیمی بورڈز کے امور پر دلچسپی نہ لینے پر سیکریٹری بورڈز و جامعات اور سیکریٹری سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن عالیہ شاہد کوہٹانے کا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کے مطابق کہ عالیہ شاہد کو سیکریٹری سکول ایجوکیشن سے ہٹانے کے لئے ان کی بطور سیکریٹری بورڈ و جامعات تقرری کا فیصلہ کیا گیا تھا اور اس فیصلے پر سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن کے چیئرمین ڈاکٹر عاصم حسین کو اعتماد میں بھی نہیں لیا گیا تھا لیکن بعد میں ڈاکٹر عاصم حسین نے بطور سیکریٹری بورڈ و جامعات و سیکریٹری سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن ان کے کام جاری رکھنے پر اتفاق کر لیا تھا تاہم اس دوران وہ نہ تو سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن کا اجلاس کر سکیں نہ ہی جامعات کے اساتذہ کی تنظیم فپواسا کے نمائندوں سے طے شدہ معاملات پر عمل کر سکیں۔ اس دوران وہ بیرون ملک دورے پر چلی گئیں اور اپنے عہدے کا چارج بھی کسی کو نہیں دیا اس صورتحال پرانہیں ہٹانے کا اصولی فیصلہ کر لیا گیا ہے ،جس کی منظوری وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بھی دیدی ہے جس کے بعد امکان ہے کہ آئندہ چند روز میں نیا سیکریٹری بورڈ و جامعات تعینات ہوجائے گا۔واضح رہے کہ جو سکریٹری بورڈز و جامعات ہو تا ہے اسی کے پاس سکریٹری سندھ ہائر ایجوکیشن کمیشن کا بھی چارج ہوتا ہے اور اسے اس مد میں تقریبا دو لاکھ روپے الگ دیئے جاتے ہیں۔ دریں اثناءڈاکٹر عاصم حسین کے قریبی ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ سیکریٹری بورڈ جامعات و سیکریٹری ہائر ایجوکیشن کمیشن سندھ عالیہ شاہد نے بیرون ملک روانگی سے ڈاکٹر عاصم کو آگاہ نہیں کیا۔