پنجاب یونیورسٹی میں سہ روزہ دوسری بین الاقوامی کانفرنس کا آغاز

اعلیٰ تعلیم کا فروغ حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے تمام اداروں کو تحقیق کا سنٹر آف ایکسی لینس بنائیں گے‘صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن
لاہور(نمائندہ کرئیر کاروان)پنجاب یونیورسٹی شعبہ انفارمیشن مینجمنٹ کے زیر اہتمام ”انفارمیشن مینجمنٹ اینڈ لائبریرز “ کے موضوع پر یونیورسٹی لاءکالج کے آڈیٹوریم میں منعقدہ دوسری تین روزہ عالمی کانفرنس کاآغاز ہوا۔جس میںصوبائی وزیر برائے ہائر ایجوکیشن پنجاب راجا یاسر ہمایوں سرفراز نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اعلیٰ تعلیم کا فروغ حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے اوراعلیٰ تعلیم کے تمام اداروں کو تحقیق کا سنٹر آف ایکسی لینس بنائیں گے۔ اس موقع پر چیئرمین پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر محمد نظام الدین ، وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر نیاز احمد، چیئرمین شعبہ انفارمیشن مینجمنٹ پروفیسر ڈاکٹر خالد محمود ، کانفرنس چیئر پروفیسر ڈاکٹر کنول امین، امریکہ ، برطانیہ،، ملائیشیا، کینیا ، کویت، بھارت اور ایران سمیت دنیا بھر سے 400سے زائد محققین اور سکالرز اور طلباءو طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔
اپنے خطاب میں راجا یاسر ہمایوں سرفراز نے کہا کہ جدید ٹیکنالوج کی بدولت معلومات کے ذرائع تبدیل ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مناسب معلومات حاصل کرنے کا ہنر بہترین محقق بننے میں کردار ادا کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنے لائبریرینز کو تربیت دینے کی ضرورت ہے کیونکہ محققین کی معیاری تحقیق میں ان کی بہت اہمیت ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت صوبہ میں تحقیق کو فروغ دینے کیلئے نئے ادارے قائم کرے گی۔
چیئرمین شعبہ انفارمیشن مینجمنٹ ڈاکٹر خالد محمود نے کہاکہ پنجاب یونیورسٹی مختلف حکومتی منصوبہ جات میں اپنے طور پر حصہ لے گی۔ انہوں نے کہاکہ ہم نئے پاکستان کی تعمیر اور تحقیق کے کلچر کو پروان چڑھانے کیلئے حکومت کی ہرممکن مدد کریں گے۔اپنے خطاب میں پروفیسر ڈاکٹر محمد نظام الدین نے کہا کہ صوبہ پنجاب بھر کی لائبیریریوں میں تقریباً450 لائبریرینز کی آسامیاں خالی پڑی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جدید لائبریریوں کاتصور سائبریرز سے بدل چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ محققین کو ریسرچ ڈیٹا تک رسائی کے جدیدطریقوں سے روشنا س کرانے کیلئے لائبریریز میں موجود انفارمیشن آفیسر کو لازمی طور پر تربیت فراہم کی جانی چاہیے۔
انہوں نے کہا کہ انفارمیشن مینجمنٹ کو تمام مضامین کے نصاب میں شامل کیا جانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ محققین کی معاونت کیلئے معلومات کے تمام ذرائع ایک دوسرے سے جڑے ہونے چاہیے۔ اپنے خطاب میں وائس چانسلر پروفیسر نیاز احمد نے کہا کہ عصر حاضر میں اس مضمون کی اہمیت کے پیش نظر پنجاب یونیورسٹی کی موجودہ انتظامیہ شعبہ انفارمیشن مینجمنٹ کی توسیع کیلئے اقدامات کرے گی۔
انہوں نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی انتظامیہ تعلیم کے اعلیٰ معیار کی روایت کو برقرار رکھتے ہوئے اس شعبہ میں بہترین خدمات کی فراہمی کیلئے تربیت یافتہ پیشہ ور فراہم کرے گی۔انہوں نے کہا کہ شعبہ میں ہونے والی جدید ڈیویلپمنٹ کے تناظر میں نصاب کو دوبارہ مرتب کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہماری لائبریریوں کا ماحول مطالعہ کرنے والوں کیلئے پرکشش ہونا چاہیے۔انہوں نے کانفرنس کے شرکاءکو مضمون کی بہتری کیلئے سود مند سفارشات تیار کرنے پر زور دیا۔