علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کا اساتذہ کے اہم قدم

علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی نے وائس چانسلرپروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی کی خصوصی ہدایت پر شعبہ لٹریسی سینٹرز کے اساتذہ کی تربیت کے لئے ایک کورس تیار کیا ہے،جو لٹریسی سینٹرزکے اساتذہ کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کو نکھارنے اور اُن کی پروفیشنل ڈیولپمنٹ کے لئے مددگار ثابت ہوگا۔یہ ”سرٹیفیکیٹ کورس“6ماہ کے دورانیہ پر مشتمل ہوگا،اس تربیتی کورس میں داخلہ فارم جمع کرانے کی آخری تاریخ 25ستمبر مقرر کی گئی ہے۔اساتذہ کی تربیت کے لئے سرٹیفیکٹ کورس میں غیر رسمی تعلیم کا تعارف،غیر رسمی تعلیم میں تدریسی معاونت، خواندگی اور زندگی کی مہارتیں ، مہارتوں پر مبنی پیشہ ورانہ تربیت ، غیر رسمی تعلیم میں تدریسی حکمت عملیاں اور غیر رسمی تعلیم میں جائزہ کورسسز شامل ہیں۔ اِس کورس میں میٹرک/سیکنڈری سکول سرٹیفکیٹ کے حامل امیدوار داخلے کے اہل ہوں گے۔لٹریسی سینٹرزکے اساتذہ کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کو نکھارنے اور اُن کی پروفیشنل ڈیولپمنٹ پر مشتمل اسشعبے کے انچارج ڈاکٹر محمد اجمل ہوں گے ‘جن کے مطابق خواندگی کے مراکز کے اساتذہ کی تربیت کے لئے معیاری پروگرامز اور کورسسز کی کمی محسوس کی جارہی تھی ،اس کمی کو پورا کرنے کے لئے وائس چانسلرپروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی کی خصوصی ہدایت پر شعبہ لٹریسی سینٹرز کے اساتذہ کی تربیت کے لئے یہ کورس تیار کیا ہے۔
اوپن یونیورسٹی کا ایک تعارف:
علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی اسلام آباد فاصلاتی نظام تعلیم کی ایشیا کی بڑی جامعات میں شمار کی جاتی ہے۔ قائد عوام ذوالفقار علی بھٹو کی عوامی حکومت نے 1974ءمیں پارلیمنٹ کے ایک قانون کے تحت پیپلز اوپن یونیورسٹی قائم کی۔ بعد میں جب قائدعوام نے 1976ء کو قائداعظمؒ اور1977ء کو علامہ اقبالؒ کا سال قرار دے کر صد سالہ جشن منانے کا اعلان کیا (سرکاری سطح پر 9 نومبر کو ہر سال عام چھٹی منانے کا فیصلہ ہوا ) تو علامہ اقبالؒ کے اعزاز میں پیپلز اوپن یونیورسٹی کو بھی علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کا نام دے دیا۔