اوپن یونیورسٹی کا طلبہ کیلئے اہم اعلان

لاہور(کرئیرکاروان ڈاٹ کام) علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے سمسٹر خزاں2018ء کے تعلیمی سیشن میں میٹرک تا پی ایچ ڈی پروگرامز کے داخلے جاری ہیں ٗ داخلہ فارم یونیورسٹی کی ویب سائٹ پر فراہم کردئیے گئے ہیں۔ یونیورسٹی نے غریب اور مستحق طلبہ کو تعلیمی سلسلہ جاری رکھنے کے لئے ان کوفیس میں رعایت اور وظائف کی شکل میں سپورٹ فراہم کرنے کے لئے خصوصی فنڈ مختص کیا ہوا ہے۔وائس چانسلر ٗ پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی کے مطابق اوپن یونیورسٹی ایک قومی یونیورسٹی ہے اس لئے ملک بھر میں موجود ہر مستحق اور غریب طالبہ یا طالبعلم کو معیاری تعلیم و تربیت کے یکساں مواقع کی فراہمی اس کی بنیادی ذمہ داری ہے تاکہ خدادا د ذھنی صلاحیتیں رکھنے والا کوئی ایک نوجوان بھی محض مالی و سائل کی کمی کے باعث اعلیٰ اور معیاری تعلیم سے محروم نہ رہ جائے۔ یونیورسٹی نے حال ہی میں ملک بھرموجود غریب ٗ مستحق اور ضرورت مند طلباء و طالبات کو سکالرشپ اور فیس میں رعائیت فراہم کرنے کے لئے 9مختلف سکیمیں شروع کی ہوئی ہیں۔ان اسکیموں سے کم آمدنی والے لیکن ایسے ذھین طلباء و طالبات سب سے زیادہ فائدہ اٹھا سکیں گے جو محض داخلہ فیس ادا کرنے کی استعداد نہ رکھنے کے باعث تعلیم ترک کردینے پر مجبور ہوجاتے ہیں۔ان منصبوں پر عملدرآمد چاروں صوبوں ٗ آزاد کشمیر اور شمالی علاقہ جات میں موجودعلاقائی دفاتر کے ذریعے کیا جارہا ہے اور ان منصوبوں پر عملدرآمد میں شفافیت کو یقینی بنانے کے لئے خصوصی معیار مقرر کیا گیا ہے۔ ان میں شامل ایک اسکیم “ارن ٹو لرن”کے تحت کوئی بھی طالب علم جو مزید تعلیم جاری رکھنا چاھتا ہے لیکن مالی وسائل کی عدم موجودگی کے باعث اس کے لئے ایسا کرنا ممکن نہیں ہے ٗ وہ یونیورسٹی یا ملک بھر میں موجود اوپن یونیورسٹی کے کسی بھی اپنے قریب ترین علاقائی دفتر میں جزوقتی خدمات انجام دے کر اس قدر رقم حاصل کرسکے گا کہ اپنے آئندہ سمسٹر کی فیس ادا کرسکے۔اسی طرح مستحق لیکن ذھین طالبات کے لئے خصوصی سکالرشپ بھی اس اسکیم کا حصہ ہے۔ان اسکیموں میں میرٹ پر سکالر شپس ٗ کمیونیٹیز کے لئے سکالرشپس ٗ خواتین کے لئے سکالرشپس اور معذور طلبہ کے لئے خصوصی سکالرشپس شامل ہیں۔ یہ سکالرشپس ملک کے دور دراز اور ان پسماندہ علاقوں میں بھی دئیے جائیں گے جہاں شرح خواندگی پچاس فیصد سے کم ہے۔سکالرشپس نقد انعامات یا فیس میں رعایت کی شکل میں دی جائیں گی۔یونیورسٹی کی قائم علاقائی کمیٹیاں طلبہ کی ضروریات کا جائزہ لیں گے اور سکالرشپس کے لئے سفارشات پیش کریں گی۔سکالرشپس کی یہ اسکیمیں یقینی طور پر ملک سے ناخواندگی کے خاتمے میں کلیدی کردار ادا کریں گی ۔