”پاکستان وبلوچستان کا نام روشن کریں“ ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری

بلوچستان کی ترقی میں خواتین کے کردار کو ہرگز نظرانداز نہیں کیا جاسکتا ہے ،ایک پڑھی لکھی خاتون پورے گھرانے کو علم کی شمع سے روشناس کراسکتی ہے، یہ بات ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری نے سردار بہادر خان ویمن یونیورسٹی کوئٹہ کے دورے کے موقع پر طالبات واساتذہ سے خطاب کرتے ہوئے کہی، اس موقع پر وائس چانسلر سردار بہادرخان ویمن یونیورسٹی کوئٹہ پروفیسر ڈاکٹر رخسانہ جبین و دیگر عہدیداران بھی موجود تھے۔
ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری نے کہاکہ سردار بہادر خان ویمن یونیورسٹی میں 10ہزار طالبات کا پڑھنا بلوچستان کے روشن مستقبل کی ضمانت ہے ،ہمارے ملک کا نصف آبادی خواتین پر مشتمل ہے اس لیے یونیورسٹی میں زیر تعلیم طالبات علم صرف نوکری کے حصول کے لیے نہ کریں بلکہ تحقیق کے میدان میں اپنی توانائیاں صرف کریں، بلوچستان کی طالبات میں ٹیلنٹ موجود ہے اگر انہیں مواقع فراہم کئے جائیں تووہ ملک وقوم کا نام روشن کرسکتی ہے۔
قاسم خان سوری نے کہا کہ پاکستان کو عظیم سے عظیم تر بنانے کے لیے لیے پاکستان تحریک انصاف کی وفاقی حکومت نے تعلیم کو اپنی اولین ترجیحات میں رکھا ہے اور وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں ہم انشاءاللہ بلوچستان میں خواتین وطالبات کے لیے مزید تعلیمی ادارے بنائینگے،ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ چیئرمین پاکستان تحریک انصاف وزیراعظم عمران خان لاہور ،،پشاور اور کراچی میں شوکت خانم ہسپتالز بنائیں اور انشاءاللہ کوئٹہ میں بھی بہت جلد شوکت خانم ہسپتال کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔
انہوں نے ویمن یونیورسٹی میں زیر تعلیم طالبات کو تلقین کی کہ وہ اپنے اپنے شعبوں میں خوب محنت کرکے پاکستان وبلوچستان کا نام روشن کریںکیونکہ پاکستان ہمارا ملک ہے اور اس کی ترقی ہم سب پر لازم ہے ،ڈپٹی سپیکر قاسم خان سوری نے یونیورسٹی کے کلاس رومز، سیکورٹی کنٹرول روم ،لائبریری اور مختلف شعبوں کا معائنہ کیاجبکہ سردار بہادر خان ویمن یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر رخسانہ جبین نے ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری کو یادگاری شیلڈ پیش کی۔