144 پاکستانی طلبہ امریکی جامعات میں اسکالرشپس حاصل کرنے میں کامیاب

144 پاکستانی طلبہ امریکی جامعات میں   اسکالرشپس حاصل کرنے میں کامیاب
 
اسلام آباد (کرئیرکاروان) تقریبا " ایک سو چوالیس انڈر گر یجویٹ پاکستانی طلباء نے امریکی حکومت کے تعاون سے چلنے والے تبادلے کے انڈر گریجویٹ پروگرام ( گلو بل یو گراڈ) کے تحت خزاں سمسٹر امریکی جامعات میں پڑھنے کے لیے سکالر شپ حاصل کیا ہے۔ پروگرام میں شامل طلبہ   ستمبر سے امریکہ کی بہترین جامعات اور کالجز میں شروع ہونے والی کلاسز میں حصہ لینے کے ساتھ ساتھ سماجی خدمات کے پروگراموں اور تربیتی ورکشاپس میں حصہ لے سکیں  گے جو امریکہ میں ان کی تعلیمی اور ثقافتی سر گرمیوں کا حصہ ہو گا۔ شریک طلبہ  کی تیاری اور روانگی سے متعلق منعقدہ اس تقریب کے موقع پر قائم مقام نائب سفیر کرسٹوفر فٹزجیرالڈ نے کہا کہ ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں بین الاقوامی طلباء کو خوش آمدید کہنے کی ایک قدیم روایت موجود ہے۔ مجھے یقین ہے کہ آپ پر وقار طریقے سے اپنی قوم کی نمائندگی کریں گے۔ انہوں نے طلباء کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ جب آپ وطن واپس آئیں گے تو مجھے یقین ہے کہ آپ اپنے معاشروں میں قائدانہ کردار ادا کریں گے اور اپنے اطراف میں امریکہ سے متعلق آگاہی فراہم کر سکیں گے۔
یو ایس ایجوکیشنل فاؤنڈیشن کی سربراہ ریٹا اختر نے اس موقع پر اپنے خطاب میں کہا کہ آج یہاں موجود گروپ پاکستان کے بہترین طلباء کی نمائندگی کر رہا ہے جنہیں گوادار سے سوات اور تھرپارکر سے ہنزہ تک موصول شدہ ہزاروں درخواستوں میں سے میرٹ کی بنیاد پر منتخب کیا گیا ہے۔ موسم بہار ۲۰۱۸ء کی یو گراڈ ایلومنا اجالا بشیر نے اپنے تبادلے کے پروگرام سے متعلق تجربات بیان کرتے ہوئے کہا کہ کس طرح امریکہ میں سماجی سروس نے انہیں پاکستان میں گھریلو تشدد سے متاثرہ افراد کے لیے کرائسس سنٹر قائم کرنے میں حوصلہ افزائی کی ۔ 2010 میں گلوبل یو گراڈ تبادلے کے پروگرام کے آغاز سے اب تک لگ بھگ اٹھارہ سو پچاس پاکستانی طلباء امریکہ میں ایک سمسٹر کی تعلیم کے لیے وظیفہ حاصل کر چکے ہیں۔