ڈاکٹر مجاہد کامران کیمپ جیل سے رہا

لاہور(نمائندہ کریئر کارروان) سابق وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی ڈاکٹرمجاہد کامران کو کیمپ جیل سے رہا کر دیا گیا۔ کامران مجاہد کا کہنا تھا کہ میرے خلاف بے بنیاد الزام تھے، نیب کے قانون میں مکمل ترمیم کی ضرورت ہے۔
لاہور ہائیکورٹ نے ضمانتی مچلکوں کے عوض رہائی کا حکم دیا تھا ، جیل سے باہر آنے پر مجاہد کامران کی اہلیہ اور شاگردوں نے  ان کا استقبال کیا اور گلدستے پیش کئے ۔نیب لاہور نے پنجاب یونیورسٹی میں غیر قانونی بھرتیوں کے الزام میں مجاہد کامران ، ڈاکٹر لیاقت اور امین اظہر کو گرفتار کیا تھا۔

سابق وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی ڈاکٹر مجاہد کامران کا اپنی رہائی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میرے خلاف بے بنیاد الزمات تھے۔ بے گناہ تھا تو عدالت نے رہا کیا، نیب میں سب ٹھیک نہیں ہے، نیب کے قانون میں مکمل ترمیم کی ضرورت ہے، نیب کے خلاف ہتک عزت کا دعوی دائر کرنے کیلئے وکلاءسے مشاورت کریں گے۔