گورنمنٹ کالج یونیورسٹی میں کلدیپ نائیر کی یاد میں تقریب کا انعقاد

لاہور(اردو کرئیر کاروان ڈاٹ کام ) بھارتی صحافی اور دانشور کلدیپ نئیر کے امن کے ویژن کو خراجِ تحسین پیش کرنے کے لیے گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور میں سیمینار کا انعقادکیا گیا۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کلدیپ نئیر کی پوتی مندرا نائیر جذباتی ہوگئیں،ان کا کہنا تھا کہ ان کے دادا نے ساری عمر پاکستان اور بھارت کے مابین امن اور دوستی کا پیغام دیا لیکن امن کایہ خواب انکی زندگی میں پورا نہ ہو سکا۔
وہ ہر سال واہگہ بارڈر پر اس خواہش سے امن کی شمعیں روشن کرتے تھے کہ یہ روشنی دونوں ممالک میں پھیل جائے۔سیفما کے سیکرٹری جنرل امتیاز عالم،ہیومین رائٹس کمیشن آف پاکستان کے صدر آئی اے رحمان اوروائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر حسن امیر شاہ نے بھی سیمینار سے خطاب کیا اور کلدیپ نائیر کی زندگی کے مختلف پہلوﺅں پر روشنی ڈالی۔
مندرا نیئر اپنے دادا کی ”استیاں“راوی میں بہانے اوران کے نام کا پودا گورنمنٹ کالج یونیورسٹی میں لگانے کے لیے دو روزہ دورہ پر پاکستان آئیں ہیں۔سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے مندرانائیر نے کہا کہ ان کا سارا بچپن دادا سے پاکستان کی کہانیاں سنتے گزرا،کلدیپ نائیر تو بھارت میں تھے لیکن ان کا دل ہمیشہ ان کی جنم بھومی پاکستان میں تھا۔مندرا نے کہا کہ جب پاکستان میں نئی حکومت آئی تو کلدیپ نائیر وینٹی لیٹر پر تھے 

اور میں نے انہیں آئی سی یو میں عمران خان کے وزیرِ اعظم بننے کی خبر دی۔
اس موقع پر خطا
ب کرتے ہوئے سیفما کے سیکرٹری جنرل امتیاز عالم کا کہنا تھا کہ بڑے افسوس کی بات ہے کہ پاکستان اور بھارت میں جو بھی امن کی بات کرتا ہے اسے شک کی نگاہ سے دیکھا جاتاہے۔ان کا کہنا تھا کہ کلدیپ
 نئیر ایک محب وطن بھارتی تھے لیکن انہیں پاکستان سے بھی بے حد پیار تھا۔ان کا کہنا تھا کہ نئی نسل
 کے لیے کلدیپ نائیر جیسے عظیم لوگوں کو سمجھنا آسان نہیں ہے۔
اس موقع پر نامور ادیب پروفیسر ڈاکٹر سعادت سعید کا کہنا تھا کہ انسان کو آزاد کرنے کی ضرورت ہے یہ دنیا ملکوں کے لیے نہیں انسانوں کے لیے ہے اس وقت انسان کے علاوہ اور کسی کی نقل وحرکت پر پابندی نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جنم بھومی ماں کی گود کی طرح ہوتی ہے جہاں آکر انسان کو سکون محسوس ہوتا ہے ،شاید اسی لیے کلدیپ نائیر کی بھی آخری خواہش تھی کہ ان کی” استیاں“ پاکستان کے دریائے راوی میں بہائی جائیں۔
ہیومین رائٹس کمیشن آف پاکستان کے صدر آئی اے رحمان کا کہنا تھا کہ میری نوجوان نسل کو یہ نصیحت ہے کہ وہ اپنی زمین اپنے وطن سے رشتہ کبھی نہ توڑیں،کیونکہ اگر آپ زمین سے رشتہ توڑے گے تو یہاں سے بسنے والوں سے بھی رشتہ ٹوٹ جائے گا۔ تقریب سے جی سی یو شعبہ انگریزی کے صدر پروفیسر صدیق اعوان نے بھی خطاب کیا۔بعدازاں مندرانئیر نے وائس چانسلر پروفیسر حسن شاہ کے ہمراہ جی سی یو کے شہاب گارڈن میں کلدیپ نئیر کے نام سے پودا لگایا۔ان کا کہنا تھا کہ یہ پودا امن کا پودا ہے اور انہیں امید ہے کہ یہ اپنے بڑے ہونے کے ساتھ ساتھ امن اور دوستی لے کر آئے گا۔