برطانیہ میں اسکول کھول دیے گئے

ثمینہ ملک (سٹیفورڈ)برطانیہ میں دس ہفتے کے لاک ڈاؤن کے بعداسکول کھول دیے گئے۔اطلاعات کے مطابق یہ فیصلہ برطانوی حکومت نے پانچ کرونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد کیاہے۔حکومت نے یہ فیصلہ آزمائشی طورپرکیاہے تاکہ اس بات کا پتہ چلایاجاسکے کہ سکول کھلنے کے بعد کروناکیسز میں اضافہ تو نہیں ہورہا۔دو ڈھائی ماہ کے طویل لاک ڈاؤن کے بعد بالآخر بچے اسکول یونیفارم میں نظرآرہے ہیں جبکہ اسکولوں میں دومیٹر کا فاصلہ رکھنے کے تمام انتظامات بھی کرلیے گئے ہیں‘لیکن دیکھنے میں آرہاہے کہ والدین ان احتیاطی تدابیر کے بعد بھی بچوں کو اسکول بھیجنے میں دلچسپی نہیں دکھارہے۔ برطانوی حکومت کے ترجمان کے مطابق اسکولوں میں دومیٹرفاصلے والے اصول کو فالو کرنے کے تمام انتظامات مکمل کرلیے گئے ہیں اور اسکولز کے گیٹس پر بھی اس بات کا پوراخیال رکھا جارہاہے کہ بچوں کوچھوڑنے آنے والے والدین قطارمیں دومیٹر کے فاصلے پر کھڑے ہوں۔تاہم ان احتیاطی تدابیرکے باوجود والدین کی ایک بڑی تعداد بچوں کو اسکول بھیجنے پر آمادہ نہیں۔ان کا کہناہے کہ ایک طویل عرصہ اسکول سے  غیرحاضر رہنے کی وجہ سے بچے اپنے دوستوں سے ملنے کوبیتاب ہیں لہٰذا جب وہ اسکول جائیں گے تو وہ سماجی فاصلہ برقرارنہیں رکھ پائیں گے۔پاکستانی کمیونٹی کا یہ بھی کہنا ہے کہ ابھی کرونا کامکمل خاتمہ ممکن نہیں ہوسکا لہٰذا حکومت کو اس طرح کا فیصلہکرکے بچوں کی زندگیوں کے ساتھ رسک نہیں لینا چاہیے۔ان کا کہنا ہے کہ حکومت کا یہ فیصلہ جلد بازی کا مظہرہے۔