نواز شریف سے محبت کرنا دہشت گردی ہے تو سو بار کریں گے، شہباز شریف

علی پور چٹھہ: پاکستان مسلم لیگ نواز کے صدر اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ الزام خان نے خیبرپختونخوا کا بیڑہ غرق کردیا، عمران خان ڈینگی سے ڈر کر نتھیا گلی پہنچ گئے تھے، آپ کو جھوٹ اور الزام کا پاکستان چاہیے یا ترقی اور خوشحالی والا؟ علی پور چٹھہ میں جلسے سے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف کوئی کرپشن ثابت نہیں ہوئی جبکہ دوسری طرف لوگ سر تاپاؤں کرپشن میں ڈوبے ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ 13 جولائی پاکستان کی تاریخ کا سیاہ دن تھا، بیٹی کے سامنے باپ کو گرفتار کیا جائے تو بیٹی پر کیا بیتتی ہے۔ شہباز شریف نے کہا کہ نواز شریف اہلیہ کو زندگی اور موت کی کشمکش میں چھوڑ کر آئے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف سے محبت کرنا دہشت گردی ہے تو سو بار کریں گے، تمام سازشوں کے باوجود 25 جولائی کو الیکشن جیتیں گے۔ ن لیگ کے صدر نے کہا کہ لوڈ شیڈنگ ختم کرنے اور سی پیک لانے والے نواز شریف کو گرفتار کیا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم پرنیب کے ذریعے پریشر ڈالا جارہا ہے، الیکشن کمیشن اور نگراں وزیراعظم خاموش بیٹھے ہیں۔ سابق وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت میں ڈالر 100 روپے کا تھا اور آج 128 پر پہنچ گیا، عمران خان کو خدانخواستہ منتخب کیا گیا تو ملک پیچھے چلا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کے جلسوں میں کرسیاں زیادہ افراد کم ہوتے ہیں، آپ کوجھوٹ اورالزام کا پاکستان چاہیے یا ترقی اور خوشحالی والا؟ عمران خان ڈینگی سے ڈرکرنتھیا گلی پہنچ گئے تھے۔ شہباز شریف نے کہا کہ عمران خان نے کہاکہ میں نے 70 بندے مروا دیے ہیں، عمران خان دیکھیں وہ بندے کہیں کوکین سے تو نہیں مرے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے امریکی صدر کی پانچ ارب ڈالرکی آفر ٹھکرائی، پیشکش ٹھکرا کر نواز شریف نے ایٹمی دھماکے کیے، جرات کا مظاہرہ کرکے پاکستان واپس آئے۔ انہوں نے کہا کہ اربوں کی کرپشن کرنے والے بابر اعوان عمران خان کی پارٹی میں بیٹھا ہے۔ شہباز شریف نے کہا کہ نواز شریف کے خلاف کوئی کرپشن ثابت نہیں ہوئی اس کے باوجود ن لیگ کے رہ نماؤں اورامیدواروں کوپیشیاں بھگتنی پڑرہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان بھائی جانتے تھے کہ انہیں جیل میں ڈالا جائے گا مگر وہ پھر بھی واپس آئے، نواز شریف کے استقبال کے لیے عوام کا سمندر تھا۔ شہباز شریف نے کہا کہ نواز شریف جانتے تھے کہ عمران خان نے 300 ارب روپے کے قرضے لیے اور کوئی ترقیاتی کام نہیں کیا، انہوں نے کرپٹ لوگوں کوٹکٹ دیے۔