سلم لیگی امیدواروں کو ٹکٹ واپس کرا کے جیپ کا نشان الاٹ کیا جا رہا ہے، اس کام کی بنیاد کس نے رکھی؟ نوازشریف کا اہم بیان

اکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد اور سابق وزیر اعظم محمد نوازشریف نے کہا ہے کہ (ن) لیگ کے امیدواروں کو ٹکٹ واپس کرا کے جیپ کے نشان الاٹ کرائے جارہے ہیں۔ علیحدہ گروپ بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ صاف اور شفاف الیکشن کی توقع ختم ہوتی جا رہی ہے۔ اس بات کی بنیاد چیف جسٹس ثاقب نثار نے رکھی ہے۔ دوسرے ادارے اس کو آگے لے کر چل رہے ہیں۔ یہ سب واقعات آئین اور قانون کے خلاف ہیں۔ ان سب کی جانچ پڑتال ہونی چاہیے اور ایک دن ہوگی۔

جو شخص ہمیں دن رات گالیاں دیتا ہے، چیف جسٹس اس کے ساتھ ہسپتال کے دورے کر رہے ہیں۔ قوم کسی صورت دھاندلی برداشت نہیں کرے گی۔ ہر قربانی دیکر عوام کے حقوق کا تحفظ کروں گا۔ جیسے ہی میری اہلیہ کی طبیعت بہتر ہوگی، ملک جاؤں گا۔ چوہدری نثار کی باتوں سے بہت تکلیف ہوتی ہے۔ کبھی جواب نہیں دیا۔

اتوار کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ ہمارے کارکنان اور رہنماؤں کو جان بوجھ کر ایک سازش کے تحت نشانہ بنایا جارہا ہے، ملتان میں ہمارے ایم پی اے کے امیدوار رانا اقبال سراج کو تھپڑ مارے گئے، راجن پور کے ایم این ایز اور ایم پی ایز سے ٹکٹ واپس کرائے گئے، یہ سب خبریں میڈیا کے ذریعے مجھ تک پہنچی کیونکہ میں اپنی اہلیہ کی علالت کے باعث سارا دن ہسپتال میں ہوتا ہوں۔ نوازشریف نے کہا کہ گزشتہ روز بھی کہا تھا کہ ساری توپوں کا رخ مسلم لیگ (ن) کی جانب کردیا گیا ہے۔