این ٹی ایس ٹیسٹ کا پرچہ آؤٹ

کراچی(نمائندہ کریئر کاروان)سندھ بھر کے میڈیکل کالجز میں داخلے کےلئے نیشنل ٹیسٹنگ سروس کی جانب سے کراچی سمیت حیدرآباد، سکھر، لاڑکانہ اور نواب شاہ میں ٹیسٹ کا انعقاد کیا گیا تاہم امتحان سے ایک روز قبل ہی گزشتہ روز امتحانی پرچہ منظر عام پر آگیا۔دادو، حیدرآباد اور لاڑکانہ میں پرچے کی کھلے عام فروخت ہوتی رہی، پرچے کی فروخت کی اطلاع پر ایف آئی اے نے کارروائی کرتے ہوئے متعدد افراد کو گرفتار کرلیا،کراچی سندھ کے میڈیکل کالجز میں داخلے کےلئے ہونے والے ٹیسٹ کا پرچہ گزشتہ رات ہی آؤٹ ہوگیا۔دوسری جانب سندھ نیشنل ٹیسٹنگ سروس کے سربراہ سید مسعود حسین رضوی دعویٰ کیا کہ پرچہ آؤٹ ہونے کی خبریں ایک ہفتے سے چل رہی ہیں اور جو پیپر آؤٹ ہوا وہ پرانا ہے۔انہوں نے کہا کہ پرچے پر درج تاریخ کو چھوڑ دیں، پرانے پرچے پیپر مارکیٹ میں موجود ہیں۔
علاوہ ازیں پیپر آؤٹ ہونے کی خبر پر ردعمل دیتے ہوئے جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر طارق رفیع نے کہا کہ پرچہ بنانا اور امتحان گاہ تک پہنچانا این ٹی ایس کی ذمہ داری ہے جبکہ لیاقت میڈیکل یونیورسٹی کے وی سی پروفیسر بیکھارام کا کہنا تھا کہ اس سے ہمارا تعلق نہیں کہ پیپر آؤٹ ہوا ہے یا نہیں، یہ ٹیسٹ ہم نہیں این ٹی ایس والے کرارہے ہیں۔